Khalid

Khalid

@TheK_Khalid

Followers3.4K
Following278

We listen half, understand quarter, think zero but react double.

Joined on May 01, 2016
Statistics

We looked inside some of the tweets by @TheK_Khalid and here's what we found interesting.

Inside 100 Tweets

Time between tweets:
2 hours
Average replies
0
Average retweets
3
Average likes
10
Tweets with photos
0 / 100
Tweets with videos
0 / 100
Tweets with links
0 / 100
Khalid
22 minutes ago

جس طرح علی ھجویری، فرید، شہباز وغیرہ کے نام کی چوری کھانے والے ان کی کرامات کے ذکر میں مشغول ہیں اس طرح ابوحنیفہ رحمہ اللہ اور بخاری رحمہ اللہ کے نام کی چوری کھانے والے ان کی نام کی تسبیح\مالا جبتے رہتے ہیں۔

Khalid
29 minutes ago

قیامت کے دن امت محمدیہ کے کلمہ گو امام محمد ﷺ کے امامت میں پیش ہوں یا امام ابو حنیفہ، امام بخاری، امام ابن تیمیہ، امام قاسم نانوتوی امام احمد رضا کی امامت میں پیش ہوں گے؟ جب محمد ﷺ کے امامت کے سوا کوٸی اور امامت قیامت کے دن ہوگی ہی نہیں تو دنیا میں کیوں؟ بہت بڑی گڑبڑ ہے!

Khalid
38 minutes ago

قیامت کے دن امت محمدیہ کے گلمہ گو کو اھلحدیث یا حنفی، دیوبندی یا بریلوی، شیعہ یا سلفی کی نام سے پکارا جاۓ گا یا مسلمین کے نام سے؟ جب قیامت کی دن مسلمین سے پکارا جاۓ تو پھر دنیا میں کیوں نہیں پکارا جاتا؟ مطلب کے کوٸ گڑبڑ ہے!

زندگی کا صرف (گذارنا) نظریہ پر ہو اور جب سب لوگ اپنے نظریات کی پیروی و سربلندی کے کوشان ہوں تو پھر Tussle شروع ہوتی ہے اور وہ Tussle دشمنی کا روپ دھار لیتے ہے جسی اس وقت شام اور یمن میں ہو رہا ہے۔ جٕسے ایران و عراق میں ہوا جب تک نظریہ ایک نہ ہوگا آپسی اتحاد و محبت ممکن نہیں

#منکر کی جب وصف ہی خود ساختہ ہو تو اس کی کیا اھمیت؟ منکر حدیث وہ ہے جو آپ ﷺ کے قول مبارکہ کو نہ دین و شریعت مانے اور نہ ہی حجت مانے۔ کوٸی اگر کسی روایت کی کتاب میں چند رویات کو قران سے متضاد یا شان رسالت کے خلاف اور مقام اھلبیت کے خلاف ہونے پر رد کردے تو وہ منکر نہیں مومن ہے

مسلمانوں میں اتحاد اور اسلام کا غلبہ تب ممکن ہے جب تمام مسلمان اپنے فرقوں جن کو وہ مسالک کہتے ہیں سے برات کا اعلان کردیں اور صرف محمد ﷺ کی پیری، مرشدی، رھبری اور امامت میں آجاٸیں اور قران کو اپنا آٸین اور سنت محمدی کو اپنی شریعت بنالیں۔

محمد ﷺ اللہ کے بندے اور پیغمبر، رسول اور آخری نبی ہیں اور ہم اللہ کے بندے اور محمد ﷺ کے پیروکار، مرید اور متبیع ہیں محمد ﷺ بھی مسلم تھے ہم ان کے پیروکار بھی مسلم ہیں محمد ﷺ ھمارا پیر، رھبر، مرشد و امام ہیں۔ ھمارہ کام محمد ﷺ سے محبت رکھ کر ان کے قول و فعل کی پیروی کرنا ہے۔

دین اسلام اللہ کا ہے اسلام کو ماننے والے کو مسلم کہتے ہیں دین اسلام کے سب بڑے مبلغین اور خدمت کاروں کو مسلمین کا امام یعنی پیغمبر کہا جاتا ہے۔ اور ہر پیغمبر کے پیروکاروں کو مسلم کہا جاتا ہے۔ پہلے نبی آدم علیہ سلام سے لیکر آخری نبی محمد ﷺ تک سب پیغمبر اور ان کے پیروکار مسلم ہیں۔

بعض غیرشیعہ بھی معاویہؓ پر تبرا کرتے ہیں ان سے گذارش ہے آپ بھلے معاویہؓ کو علیؓ کے مقابلہ کا صحابی نہ مانو۔ میں بھی یہی کہتا ہوں کے بحثیت صحابی علیؓ کا درجا بلند ہے پر ان کی کردار کشی، ان کے لیے نازیبا الفاظ استعمال کرنا اقدار مسلمانی کے منافی ہے یاد رہے کہ وہ مسلمین کے ماموں ہیں

مسلمان اور مشرکین مکہ میں ایک بات مشترک ہے وہ اپنے قبیلے کا نام و ناموس کی سربلندی اور بقا کے لیے آپس میں لڑتے رہتے تھے اور مسلمان اپنے فرقہ کے نام و ناموس کی سربلندی اور بقا کے لیے لڑتے ہیں

آپ نے بھینس یا گاۓ کا کٹا دیکھا ہوگا، وہ ماں کا دودھ پینے کے لیے ہر وقت ماں کے پیچھے یا آسپاس رہتا ہے۔ فرقہ پرست مولوی کے پیروکار بھی ایسے ہی اپنے فرقہ کے مولوی کے گرد جمع رہتے ہیں پر مولوی ان کو دودھ کے بجاۓ گوبر دیتا ہے۔ اور پیروکار اس گوبر کو گاجر کا حلوہ سمجھتے ہیں۔

مسلمان ذلت و پستی کا شکار اس لیے ہیں کہ ان نے اصلی دین کے بجاۓ نقلی دین اپنا لیا ہے اللہ کی نعمت یعنی دین، دینی نام، دینی منسوبیت و پہچان بدل دی ہے اس لیے ذلیل و پست ہیں اسلام کے بجاۓ حنفیت، دیوبندیت، بریلویت، شیعت، اھلحدیثیت مسلمان کے بجاۓ حنفی، دیوبندی، بریلوی، شیعہ، اھلحدیث۔

ھندٶ عیساٸی یہودی اور فرضی مسلمان میں کوٸی فرق نہیں ہے برھمن کا بیٹا برھمن، ویشنو کا ویشنو، کھتری کا کھتری، شودر کا شودر ہے کیتھولک کا بیٹا کیتھولگ، پروٹسٹنٹ کا پروٹسٹنٹ ہے دیوبندی کا بیٹا دوبندی، بریلوی کا بریلوی، شیعہ کا شیعہ، اھلحدیث کا اھلحدیث ہے ہر کوٸی باپ داد کی پر ہے!

اگر اسلام میں کسی ذات جیسے حنفی وغیرہ سے منسوبیت لازم ہوتی تو صحابہ خود محمدی کہتے یا سلفی کہتے اگر دینی شعار سے منسوبیت لازم ہوتی تو پھر صحابہ خود اھل قران یا اھل سنت یا اھل حدیث یا شیعہ کہتے اگر کسی دیوبندی یا بریلی جیسے شھر سے منسوبیت لازم ہوتی صحابہ خود کو مکی مدنی کہتے

#قائد صرف ایک ہے سیاست و عدالت، معیشت و معاشرت، اخلاق و مذہب سب کا قائد صرف ایک #محمّد ﷺ ہے۔ محمّد ﷺ سے صرف نمازِ نبوی اور چند مذہبی فروعی چیزیں لینا اور زندگی کے باقی تمام شعبوں قانون و سیاست، معاشرت و معیشت میں دوسروں کی پیروی کرنا اسلام کی صریح خلاف ورزی ہے۔

مسلمان یہ جانتے اور مانتے ہیں کہ قرآن کتابِ الٰھی ہے اور محمد ﷺ رسولِ خدا ہیں پھر بھی ان دونوں کی پیروی سے اسی طرح بھاگتے ہیں جیسے ایک کافر بھاگتا ہے۔ اسی لیے بحیثیت امت وہ منتشر ہیں اور ان پر ذلت و مسکنت مسلط کر دی گئی ہے۔

جو آدمی خود کو مسلمان کہتا ہے لیکن قرآن و سنت سے جاہل اور نافرمان ہے جیسے ایک کافر ہوتا ہے تو صرف نام اور لباس کے فرق کی وجہ سے اللہ کے پاس اس کا انجام ایک کافر سے مختلف کیسے ہو سکتا ہے؟

اللہ نے سورہ التوبہ آیت ۳۱ میں بتایا کہ انھوں نے اپنے احبار یعنی مولوی/علماء اور رحبان یعنی پیروں/درویشوں کو اللہ کے سوا رب بنا لیا ہے یہ آیت عیساٸیوں پر پر اتری تھی۔ اس بات پر اتری جو ہم کر رہے ہیں یعنی مولوی/علماء پیروں/درویشوں کی بات کو ایسے مانتے ہیں جیسے اللہ بات مانی جاۓ

اللہ نے سورہ الشورى کی آیت ٢١ میں کہا کہ جو لوگوں اللہ کے بتاۓ احکام دین یعنی رستے کے سوا اور بتاۓ رستہ یعنی احکام دیں پر چلتے ہیں وہ شرک کرتے ہیں۔ أَمْ لَهُمْ شُرَكَاءُ شَرَعُوا لَهُم مِّنَ الدِّينِ مَا لَمْ يَأْذَن بِهِ اللَّـهُ

Next Page